Recent Comments

No comments to show.

ہفتےمیں ایک گھنٹہ یہ کام کرنے سے آپ کو دل کا دورہ پڑ نے کا خطرہ ستر فیصد کم ہو جاتا ہے

آرٹیکلز
ہفتےمیں ایک گھنٹہ یہ کام کرنے سے آپ کو دل کا دورہ پڑ نے کا خطرہ ستر فیصد کم ہو جاتا ہے!

ورزش تو بہت سے لوگ کرتے ہیں لیکن بہت کم لوگ جانتے ہیں کہ وزن اٹھانے کی ورزش سے جو فوائد حاصل ہوتے ہیں وہ کسی اور طرح حاصل نہیں ہو سکتے۔ اور یہ فوائد ایسے حیران کن ہیں کہ جان کر آپ یقین نہیں کر پائیں گے۔ حال ہی میں کی گئی ایک تحقیق سے معلوم ہوا ہے کہ ہفتے میں اگر آپ مجموعی طور پر ایک گھنٹہ وزن اٹھانے کی ورزش کر لیں یعنی روزانہ دس منٹ بھی کافی ہیں تو ہارٹ اٹیک اور فالج کا خطرہ سترہ فیصد کم ہو جاتا ہے۔ اگر آپ کوئی ایسا کام کرتے ہیں۔جس میں وزن اٹھانا پڑتا ہے تو اس کے بھی یہی فوائد حاصل ہوں گے۔ یہ حیران کن نتائج آنیو واسٹیٹ یو نیورسٹی کے سائنس دانوں نے تیراں ہزار سے زائد افراد میں دل کی بیماری، فالج کی بیماری، اور ورزش کے ان بیماریوں پر اثرات کا مطالعہ کر نے کے بعد اخذ کیے ہیں۔ ماہرین کا کہنا ہے کہ وزن اٹھانے کی ورزش کر نا یا ایسا کام کر نا جس میں وزن اٹھا نا پڑے، میٹا بولک سنڈ روم کا خطرہ کم کر دیتا ہے جس کے نتیجے میں بلڈ پریشر متوازن ہو جاتا ہے بلڈ شوگر میں توازن آ جاتا ہے جسم سے فالتو چربی کاخاتمہ ہوتا ہے دل کی صحت اچھی ہو جاتی ہے فالج سے تحفظ ملتا ہے اور ذیا بیطس کا خظرہ بھی کم ہو جاتا ہے۔ایک ہفتے میںمجموعی طور پر ایک گھنٹے کی وزن اٹھانے کی ورزش بھی کافی ہے، اس سے زیادہ وقت کے لیے یا بے جا طور پر زیادہ وزن اٹھانے کا فائدہ نہیں ہے۔ اس طرح جا گنگ اور ایر و بک ورزشوں کے اپنے فوائد ہیں لیکن دل کی بیماری اور فالج کا خطرہ کم کرنے میں ان کا فائدہ وزن اٹھانے کی ورزش جیسا نہیں دیکھا گیا۔ دوسرے لفظوں میں آپ یہ کہہ سکتے ہیں کہ مسل بنانے کے لیے کی جانے والی ورزشیں فائدہ مند ثابت ہوتی ہیں کیو نکہ ان کے لیے آپ کو وزن اٹھا نا پڑ تا ہے۔ جو لوگ بہت ہی ز یادہ وزن اٹھاتے ہیں وہ لوگ دل کی بیماریوں سے دور رہتے ہیں۔انہیں دل کی بیماریاں نہیں لگتیں اور اس طرح وہ ساری زندگی تندرست اور توانا رہتے ہیں کیو نکہ وزن اٹھانے سے چربی گھلتی ہے اور جسم میں فالتو چربی جسم میں کئی بیماریوں کے جنم کا باعث بن سکتی ہے۔ جو لوگ جم جاتے ہیں اور مختلف قسم کا وزن اٹھاتے ہیں۔ ان کے لیے ایک خوش خبری یہ بھی ہے کہ انہیں ہارٹ اٹیک اور فالج ہونے کے امکانات ستر فیصد تک کم ہو جاتے ہیں کیو نکہ چربی گھلنے سے بلڈ کا فلو بہت ہی اچھے طریقے سے ہوتا ہے اور بلڈ کا فلو بہت ہی اچھے طریقے سے ہونے کی وجہ سے چربی نہیں بن پاتی اور انسان تندرست رہتا ہے۔

50% LikesVS
50% Dislikes