Recent Comments

No comments to show.

18 سالہ لڑکی سے شادی کے بعد عامر لیاقت نے عمران خان کو فون گھما دیا عمران خان نے ایسی بات کہہ دی عامر لیاقت کے چودہ طبق روشن ہو گے

اسلام آباد (این این ایس نیوز) وزیر اعظم عمران خان نے پاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی) کے رکنِ قومی اسمبلی عامر لیاقت حسین کو تیسری شادی کی مبارکباد دی ہے۔

عامر لیاقت نے اپنے ایک ٹویٹ میں بتایا کہ وزیر اعظم نے انہیں فون کرکے شادی کی مبارک باد دی ہے، وہ وزیر اعظم کے شکر گزار ہیں کہ انہوں نے شادی کی مبارک باد دی۔

خیال رہے کہ عامر لیاقت نے گزشتہ روز لودھراں سے تعلق رکھنے والی 18 سالہ دنیہ شاہ نامی لڑکی سے تیسری شادی کی ہے۔ گزشتہ روز ہی ان کی دوسری بیوی سیدہ طوبیٰ انور نے خلع کا اعلان کیا تھا۔

نجی ٹی وی 92 نیوز کے پروگرام میں گفتگو کرتے ہوئے عامر لیاقت نے کہا کہ انہوں نے شادی کی ہے کبھی حرام رشتے نہیں رکھے، انہوں نے ہمیشہ حلال رشتوں پر یقین رکھا ہے، اللہ نے ایک سے زائد شادیوں کا حکم دیا ہے، ہم بھارت سے ہجرت کرکے ضرور آئے ہیں لیکن بھارتی کلچر کو اپنے اوپر سوار نہ کریں ، بھارت میں ایک شادی پر اکتفا کیا جاتا ہے لیکن اسلام زیادہ شادیوں کی حوصلہ افزائی کرتا ہے، لوگ پہلی بیوی سے ڈر کر دوسری شادی نہیں کرتے، جو بھی دوسری شادی کا خواہش مند ہے وہ اللہ سے ڈرے اور بیوی سے نہ ڈرے۔

انہوں نے کہا کہ ان کے نزدیک چوتھی شادی کی گنجائش بھی موجود ہے۔ ایک سوال کے جواب میں عامر لیاقت کا کہنا تھا کہ اگر وہ اسمبلی میں دوسری شادی کے حوالے سے بل لائے تو بہت سے لوگ اپنے بل میں چھپ جائیں گے، فیملی لاز میں ترامیم کی ضرورت ہے، عائلی قوانین کا پاکستان کے کلچر سے کوئی تعلق نہیں ہے، یہ تو ایوب خان نے اپنی بیٹی کیلئے اس وقت بنائے تھے جب ان کے داماد نے دوسری شادی کی تھی۔

عامر لیاقت کا مزید کہنا تھا کہ پاکستان میں مردوں کو دوسری، تیسری اور چوتھی شادی کی اجازت دی جائے، اللہ نے انسان کو کمزور بنایا ہے، شادی ہوجائے تب بھی وہ دوسری طرف دیکھتا ہے اسی لیے ایک سے زائد شادیوں کا حکم دیا گیا ہے۔

جب ان سے پوچھا گیا کہ وہ اب جنوبی پنجاب کے داماد ہوگئے ہیں تو کیا جنوبی پنجاب صوبے کیلئے بھی کام کریں گے، اس سوال پر عامر لیاقت نے کہا کہ اس شادی سے دو محروم قومیں ایک ہوئی ہیں، یعنی سرائیکی اور مہاجر، دونوں ہی کے صوبے کے بارے میں سوچیں گے، قائد اعظم نے بھی اپنے 14 نکات میں کہا تھا کہ کراچی کو ممبئی سے علیحدہ کیا جائے، کراچی کبھی سندھ کا حصہ تھا ہی نہیں

50% LikesVS
50% Dislikes